فیصل آباد: سفیر امن عوامی جلسہ، ڈاکٹر حسن محی الدین قادری کی شرکت

مورخہ: 04 مارچ 2018ء

پاکستان عوامی تحریک فیصل آباد کے زیراہتمام ’’سفیرِ امن عوامی جلسہ‘‘ کا انعقاد کیا گیا جس میں چیئرمین سپریم کونسل سینئر مرکزی رہنما عوامی تحریک ڈاکٹر حسن محی الدین قادری نے خصوصی شرکت کی۔

عوامی جلسہ سے خطاب کرتے ہوئے ڈاکٹر حسن محی الدین نے کہا کہ 2018ء کا الیکشن نااہل اور کرپٹ اشرافیہ کا نائن الیون ثابت ہو گا، آئین 2012ء سے ڈاکٹر طاہرالقادری کی زبان سے قوم اور اداروں کو پکار رہا ہے۔ مجھے کیوں نکالا کا شور مچانے والے سن لیں انہیں سانحہ ماڈل ٹاؤن کے مظلوموں کی آہوں اور سسکیوں نے نکالا، ڈاکٹر محمد طاہرالقادری آئندہ نسلوں کے خوشحال مستقبل کی جنگ لڑرہے ہیں اور یہ جنگ منطقی انجام تک پہنچے گی، اس جنگ میں ہم نے جانی، مالی قربانیاں دی ہیں، قاتل سن لیں یہ جنگ ادھوری نہیں چھوڑی جائیگی۔ انہوں نے جس نظام کو اپنے تحفظ کیلئے پالا پوسہ وہ آج اسی نظام میں یتیم ہو گئے۔ مجھے کیوں نکالا کا شور مچاتے ہوئے گیدڑ جنگل کی طرف بھاگ رہے ہیں۔

ڈاکٹر حسن محی الدین نے کہا کہ ڈاکٹر طاہرالقادری نے جنوری 2012 ء میں خون جما دینے والے سردی میں 5 دن اور 2014ء میں جون جولائی کی جھلسا دینے والی گرمی میں 72 دن تک آئین کی پکارعوام تک پہنچائی اور آئین کے آرٹیکل 62، 63 کی اہمیت کو اجاگر کیا الحمدللہ آئین کے یہی آرٹیکل قاتل اور لٹیروں کے گلے کا پھندا بنے۔

عوامی تحریک کے مرکزی سیکرٹری جنرل خرم نواز گنڈاپور نے عوامی جلسہ سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ آئینی الیکشن کمیشن کی تشکیل اور انتخابی اصلاحات سے حقیقی جمہوریت آئے گی اور عوام کے حقیقی نمائندے اسمبلیوں میں جائیں گے تو ملک کی تقدیر بدلے گی۔

عوامی تحریک پنجاب کے صدر بشارت جسپال نے کہا کہ نواز شریف کا انقلاب یہ ہے کہ کوئی لوٹ مار کی دولت کا حساب مانگے تو اس پر حملہ کر دو، چھانگا مانگا کے جنگل آباد کرنے والے آج کس ووٹ کے تقدس کی بات کرتے ہیں اور کس کو دھوکہ دے رہے ہیں؟

میاں ریحان مقبول نے عوامی جلسہ سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ سٹیٹس کو کی قوتوں کو عوام کا حق حکمرانی گوارہ نہیں۔ جمہوریت کی آڑ میں ایک خاندان کی حکمرانی کو قبول نہیں کریں گے، لوڈشیڈنگ کے خاتمے کے دعوؤں کی اصلیت جون جولائی میں سامنے آجائیگی۔ انہوں نے کہا کہ فیصل آباد کے عوام اس فرعونی نظام سے ٹکرانے کیلئے صرف تیار ہی نہیں بے تاب بھی ہیں۔ انشاء اللہ تعالیٰ اشرافیہ کے اس قاتل نظام کی گرتی ہوئی دیوار کو آخری دھکا ڈاکٹر طاہرالقادری اور اس کے کارکن دینگے۔

عوامی جلسہ سے میاں عبدالقادر، رانا طاہرسلیم، محمد وحید، خلیل بھٹہ، میاں محمداشرف، افتخار رندھاوا، ساجد حسین، راجہ زاہد نے بھی خطاب کیا۔

تبصرہ

Top