ایچ ای سی کی تحلیل کے خلاف مصطفوی سٹوڈنٹس موومنٹ کا احتجاجی مظاہرہ

مصطفوی سٹوڈنٹس موومنٹ کے زیراہتمام لاہور پریس کلب کے باہر ایچ ای سی کی تحلیل اور اسکی صوبوں کو منتقلی کے خلاف مظاہرہ مورخہ 12 اپریل 2011ء کیا گیا جسمیں مختلف یونیورسٹیز/ کالجز کے سینکڑوں طلبہ اور اساتذہ نے حصہ لیا۔ طلباء نے ایچ ای سی کی تحلیل اور اسے صوبوں کے حوالے کرنے کے فیصلے کے خلاف بینرز اور کتبے اٹھا رکھے تھے۔ مظاہرے کی قیادت مصطفوی سٹوڈنٹس موومنٹ کے مرکزی صدر تجمل حسین نے کی جبکہ اس موقع پر سینئر نائب صدر MSM ساجد ندیم گوندل، صدر مصطفوی سٹوڈنٹس موومنٹ جنوبی پنجاب محمد صدیق جان، حافظ رمضان نیازی، علی رضا، محمد انعام مصطفوی اور دیگر طلباء قائدین بھی موجود تھے۔

مظاہرے سے خطاب کرتے ہوئے صدر مصطفوی سٹوڈنٹس موومنٹ تجمل حسین نے کہا کہ ایچ ای سی کو صوبوں کے حوالے کرنا ظلم ہے ایسا فیصلہ ملکی تاریخ میں تعلیم کے شعبہ میں سیاہ ترین دن کے طور پر یاد رکھا جائے گا۔ انہوں نے کہا کہ تعلیم دشمن سیاستدان HEC جیسے ادارے پر کاری ضرب لگا کر ملک میں اپنی اجارہ داری قائم رکھنے کے جس مذموم مشن پر ہیں اسے طلباء مل کر ناکام بنا دیں گے۔ اس اقدام سے عالمی سطح پر پاکستان کے تعلیمی اداروں پر بڑھنے والا اعتماد بری طرح مجروح ہو گا۔ چاہیے تو یہ تھا کہ حکومت ایچ ای سی کے اختیارات میں اضافہ کر کے اسے مزید مضبوط اور فعال کرتی لیکن اس کےبرعکس اسے تحلیل کر کے پاکستان میں رہی سہی تعلیم کو بھی ختم کیا جا رہا ہے۔ بیرون ملک یونیورسٹیز میں ذہین طلبہ کے پڑھنے کا عمل بھی بری طرح متاثر ہوگا۔ طلباء رہنماؤں نے کہا کہ ایچ ای سی جیسے ادارے کا سیاسی بنیادوں پر قتل عام کرنے سے پاکستان میں اعلیٰ تعلیم بھی سیاسی مصلحتوں اور مداخلت کا شکار ہو کر تباہ ہو جائے گی، اس لئے طلباء پاکستان کے وقار کی علامت بننے والے ادارے کے خلاف اس سازش کو کبھی کامیاب نہ ہونے دیں گے۔

ساجد ندیم گوندل نے کہا کہ حکومتیں تو اداروں کو مضبوط بناتی ہیں مگر پاکستان کے نام نہاد سیاستدان تعلیم کے شعبہ میں ایک مضبوط اور متحرک ادارے کو اس لئے ختم کر رہے ہیں کہ اس نے جعلی ڈگریوں کے ایشو پر کسی دباؤ کو خاطر میں نہ لاتے ہوئے عوام دشمن جاہل سیاستدانوں کو بے نقاب کیا۔ انہوں نے کہا کہ ہائر ایجوکیشن کمیشن کے باعث پاکستان میں اعلیٰ تعلیم کا مستقبل روشن ہے۔ پاکستان کو موجودہ سیاسی مقتدر طبقہ جاگیرداروں، وڈیروں، صنعت کاروں اور ریاستی اداروں کے طفیلیوں پر مشتمل ہے اور یہی وہ لوگ ہیں جو پاکستان کے تمام وسائل پر خود قابض رہنا چاہتے ہیں۔ ہائر ایجوکیشن کمیشن کو بند کر کے در اصل درمیانے طبقے کو اعلیٰ تعلیم کی سہولیات سے محروم کرنے کی گھناؤنی سازش کی جا رہی ہے۔

رپورٹ: محمد صدیق جان

تبصرہ

تلاش

ویڈیو

We Want to CHANGE the Worst System of Pakistan
Presentation MQI websites
Advertise Here
Top