اسلام آباد : این اے 48 اسلام آباد کا علماء کنونشن

تحریک منہاج القرآن اسلام آباد این اے 48 کے زیر اہتمام 11 دسمبر 2012ء کو علماء کنونشن منعقد ہوا۔ کنونشن میں شیخ الحدیث مولانا ظہور الاسلام، صاحبزادہ حسیب احمد نظیری، علامہ حاکم دین نقشبندی، قاری گلزار احمدمدنی، قاری دوست محمد، علامہ عبدالقادر سکندری، قاری احسان قادر نعیمی، علامہ شمریز اعوان، مولانا محمد اسلم، مولنا قاری محمد اظہر، علامہ تصدق حسین نقشبندی، مولانا شبیر حسین، علامہ ممتاز ہارونی، احمد رضا قادری، قاری ایاز منہاس اور صدر تحریک منہاج القرآن این اے 48 ابرار رضا ایڈووکیٹ، ناظم تحریک عرفان طاہر کے علاوہ مختلف مکتبہ فکر کے دیگر علماء مشائخ نے بھی بھرپور شرکت کی۔

پروگرام کا آغاز تلاوت قرآن مجید اور نعت مبارکہ سے ہوا۔ اس کے بعد علماء کے اظہار خیال کا سلسلہ شروع ہوا۔

مرکزی ناظم دعوت تحریک منہاج القرآن صاحبزادہ ظہیراحمد نقشبندی نے کہا کہ علماء حقیقی معنوں میں فکر حسین علیہ السلام کے وارث ہیں۔ انہوں نے کہا کہ آج ہمیں یزیدی نظام کے خلاف حسینی کردار ادا کرنا ہے۔ جس کے لیے ہمیں شیخ الاسلام ڈاکٹر محمد طاہرالقادری کی کال پر لبیک کہتے ہوئے 23 دسمبر کو مینار پاکستان پر جمع ہو کر یزیدی نظام کے خلاف اپنا کردار ادا کرناہوگا۔

ڈاکٹر عمر ریاض عباسی نے کہا کہ ڈاکٹر طاہرالقادری کی علمی، فکری، اور تحقیقی خدمات سے استفادہ کرنے کی ضرورت ہے۔

علامہ سلیم سعیدی نے کہا کہ ڈاکٹرطاہرالقادری کی خدمات کااحاطہ کرنامشکل ہے اور زمانہ ان کی خدمات کامعترف ہے۔

پروفیسر عبد الغفور نجم نے کہاکہ یہ وقت آزمائش اور امتحان کا ہے، لیکن جب بھی قائد تحریک نے پکارا تو ہم لبیک کہیں گے۔

علامہ مہرعلی شاہ نے کہاکہ ڈاکٹر طاہرالقادری کے ساتھ ہر طرح کا تعاون کرنے کے لئے تیارہیں۔

علامہ ملک شمریز خان اعوان نے کہ 23دسمبر کو ڈاکٹر طاہرالقادری کی آواز میں آواز ملانا وقت کی ضرورت بن جائے گا۔

کنونشن کے اختتام پرصدر تحریک منہاج القرآن اسلام آباد ابرار رضا ایڈووکیٹ اور سہیل مفتی نے آنے والے تمام علماء کاشکریہ اداکیا۔ پروگرام کا اختتام دعائے خیر سے ہوا۔

تبصرہ

تلاش

ویڈیو

Ijazat Chains of Authority
Admissions Open Minhaj University Lahore
We Want to CHANGE the Worst System of Pakistan
Presentation MQI websites
Advertise Here
Top