ڈاکٹر طاہرالقادری کا میاں نواز شریف کی والدہ سے رائیونڈ دھرنا سے متعلق کوئی رابطہ نہیں ہوا، ترجمان پاکستان عوامی تحریک

ڈاکٹر طاہرالقادری کا میاں نواز شریف کی والدہ سے رائیونڈ دھرنا سے متعلق کوئی رابطہ نہیں ہوا، سینئر صحافی عارف نظامی کی طرف سے پیسے لئے جانے کا الزام گھٹیا اور شرمناک ہے، ڈی این اے پروگرام کے میزبانوں نے معافی نہ مانگی تو قانونی چارہ جوئی کریں گے، ترجمان پاکستان عوامی تحریک

لاہور (28 ستمبر 2016) پاکستان عوامی تحریک کے ترجمان نے کہا ہے کہ رائے ونڈ مارچ ملتوی کرنے سے متعلق میاں محمد نواز شریف کی والدہ کا ڈاکٹر طاہرالقادری کو کوئی فون آیا اور نہ بلواسطہ یا بلاواسطہ ذرائع سے کوئی بات ہوئی۔ رائے ونڈ جا کر احتجاج نہ کرنے کا فیصلہ پاکستان عوامی تحریک کی سنٹرل کور کمیٹی نے کیا جس کے بارے میں سربراہ عوامی تحریک پریس کانفرنس کر کے تفصیل سے آگاہ کر چکے ہیں۔ اس حوالے سے نجی ( چینل 24) کے میزبان چودھری غلام حسین کا میاں نواز شریف کی والدہ سے ٹیلیفونک گفتگو کا دعویٰ غلط، تہمت اور الزام تراشی پر مبنی ہے جسے ہم سختی سے مسترد کرتے ہیں اور اس غلط بیانی کی شدید الفاظ میں مذمت کرتے ہیں۔ اسی طرح سینئر صحافی عارف نظامی کا اخراجات کے نام پر پیسے وصول کیے جانے کا الزام بھی انتہائی بے ہودہ، لغو، گھٹیا، غلیظ اور شرمناک ہے جس کی ہم شدید الفاظ میں مذمت کرتے ہیں اور اگر ڈی این اے پروگرام کے مذکورہ میزبانوں نے اپنے الفاظ واپس نہ لئے تو قانونی چارہ جوئی کریں گے۔

ترجمان نے کہا کہ عارف نظامی کا بے بنیاد الزام زرد صحافت کا مظہر اور مروجہ صحافتی اقدار کے بر خلاف ہے۔ اس گھٹیا الزام تراشی پر پاکستان عوامی تحریک کے کارکنان میں شدید اضطراب اور غم و غصہ پایا جاتا ہے۔ لہٰذا ڈی این اے پروگرام کے میزبان عارف نظامی اپنے الفاظ واپس لیں اور ہماری وضاحت اپنے پروگرام میں شامل کریں۔ ترجمان نے کہا کہ پیسے لیے جانے کے حوالے سے الزام تراشی کی جرات آج تک ہمارے بدترین مخالفین کو بھی نہیں ہو سکی۔ سینئر صحافیوں کی طرف سے بلاتحقیق اور بلاثبوت الزام تراشی پر ہمیں سخت دلی صدمہ پہنچا ہے۔ لہٰذا ڈی این اے پروگرام کے میزبان اپنے الفاظ واپس لیں اور معافی مانگیں۔

تبصرہ

تلاش

ویڈیو

Ijazat Chains of Authority
Admissions Open Minhaj University Lahore
We Want to CHANGE the Worst System of Pakistan
Presentation MQI websites
Advertise Here
Top