سانحہ ماڈل ٹاؤن کے ایک اور قاتل افسر کو پسند کی پوسٹنگ مل گئی: خرم نواز گنڈاپور

مورخہ: 15 مارچ 2020ء

انسپکٹر عامر سلیم کو شہباز شریف کی جے آئی ٹی نے قتل عام کا ذمہ دار ٹھہرایا تھا
سابق حکمرانوں کے حاشیہ بردار حکومت کو خراب کرنے کا کوئی موقع جانے نہیں دے رہے
حکمران اپنی چارپائی کے نیچے ڈنگوری پھیرتے رہیں: سیکرٹری جنرل عوامی تحریک

لاہور (15 مارچ 2020) پاکستان عوامی تحریک کے سیکرٹری جنرل خرم نواز گنڈاپور نے کہا ہے کہ سانحہ ماڈل ٹاؤن کے ایک اور مجرم انسپکٹر عامر سلیم شیخ کو اس کی خواہش کے مطابق تھانہ صدر فیصل آباد میں بطور ایس ایچ او تعینات کر دیا گیا۔ عامر سلیم شیخ کو شریف برادران کی قائم کی گئی جے آئی ٹی نے بھی قتل عام کا قصور وار ٹھہرایا اور عامر سلیم دو سال جیل میں بند رہا، انہوں نے اپنے بیان میں کہا کہ پنجاب کی بیوروکریسی اور پولیس میں آج بھی کچھ کالی بھیڑیں موجود ہیں ہیں جو موقع ملنے پر قاتل برادران کی نمک حلالی کو اپنا فریضہ سمجھتے ہوئے موجودہ حکومت کو بدنام کرنے کا کوئی موقع ہاتھ سے جانے نہیں دیتی، انہی کالی بھیڑوں نے سانحہ ماڈل ٹاؤن کے مرکزی کردار ڈاکٹرتوقیر شاہ کو بھی ایک اہم عہدے پر بٹھانے کی کوشش کی، خرم نواز گنڈاپور نے کہا کہ سنگین جرائم میں ملوث ملزمان کو فیلڈ ڈیوٹی دینا پولیس کے ادارے کی ساکھ کو برباد کرنے کی شعوری کوشش ہے۔ پنجاب کے حکمران اپنی چارپائی کے نیچے ڈنگوری پھیرتے رہیں ورنہ سابق حکمرانوں کے حاشیہ بردار بیوروکریٹ انہیں کہیں کا نہیں چھوڑیں گے، انہوں نے کہا کہ ہمارا مطالبہ ہے کہ جب تک سانحہ ماڈل ٹاؤن کیس کاحتمی فیصلہ نہیں ہو جاتا اس میں ملوث عناصر کو کسی عہدے پر نہ بٹھایا جائے، جب بھی کسی ملزم کو اہم عہدہ ملتا ہے تو سانحہ ماڈل ٹاؤن کے شہداء کے ورثاء کے زخم ہرے ہو جاتے ہیں، انہوں نے کہا کہ سانحہ ماڈل ٹاؤن میں ملوث بہت سارے پولیس افسر آج بھی اپنی پسند کے تھانوں اور عہدوں پر موجود ہیں۔

تبصرہ

تلاش

ویڈیو

Minhaj TV
Quran Reading Pen
We Want to CHANGE the Worst System of Pakistan
Presentation MQI websites
Advertise Here
Top