منہاج یونیورسٹی لاہور میں لیگ سپنر عبدالقادر کی یاد میں تقریب، عالمی و قومی کرکٹرز کی شرکت

بین الاقوامی شہرت یافتہ کرکٹرز، کپل دیو، رچرڈ سن، مائیکل ہولڈنگ، ڈیوڈ بون و دیگر نے خصوصی ویڈیو پیغام بھجوائے
جاویدمیانداد، وسیم اکرم، اقبال قاسم، محسن حسن خان، علیم ڈار، مشتاق احمد، شہریار نفیس نے ویڈیو پیغام بھجوایا
تقریب سے ڈاکٹر حسین محی الدین قادری، ڈاکٹر ساجد محمود شہزاد، خالد محمود، اظہر زیدی، سلمان قادر، سلمان بٹ، عامر سہیل نے بھی خطاب کیا

لاہور (15 اکتوبر 2021ء) منہاج یونیورسٹی لاہور کے زیراہتمام قومی کرکٹ ہیرو، عظیم لیگ سپن باؤلر عبدالقادر (مرحوم) کی یاد میں خصوصی تقریب کا انعقاد کیا گیا۔ تقریب میں بین الاقوامی شہرت یافتہ نامور کرکٹرز نے عبدالقادر (مرحوم) کو خراج تحسین پیش کیا۔ تقریب میں عبدالقادر (مرحوم) کے بیٹے سلمان قادر ان کی بیٹی نور فاطمہ ان کی نواسی اور خاندان کے دیگر افراد نے خصوصی طور پر شرکت کی۔ بین الاقوامی شہرت یافتہ کرکٹرز مائیکل ہولڈنگ، رچی رچرڈ سن، لوگی، ڈیوڈ بون، اظہر الدین، وسیم اکرم، سرفراز نواز، محسن حسن خان، جاوید میانداد، کپل دیو، روشن ماہنامہ، ڈینی موریسن، مدن لال، اظہر زیدی، مائیک ہیش مین، علیم ڈار، رچرڈ لنگروتھ، سابق چیئرمین پی سی بی خالد محمود، اقبال قاسم، آئین بشپ، سابق اولمپئین منظور جونئیر، عمران طاہر، شہریار نفیس، سلمان بٹ، سکواش لیجنڈ جہانگیر خان، ہاکی لیجنڈ سمیع اللہ خان، حسن سردار، ثناء میر نے تقریب کے لئے خصوصی ویڈیو پیغام ریکارڈ کر کے بھجوایا اور کرکٹ ہیرو عبدالقادر (مرحوم) کو ان کی کرکٹ کیلئے قومی خدمات پر خراج تحسین پیش کیا۔

منہاج یونیورسٹی لاہور کے ڈپٹی چیئرمین بورڈ آف گورنرز ڈاکٹر حسین محی الدین قادری نے عبدالقادر (مرحوم) کو خراج تحسین پیش کرتے ہوئے کہا کہ مرحوم کی منہاج القرآن اور منہاج یونیورسٹی لاہور سے ایک خاص قلبی وابستگی تھی۔ سپورٹس کے حوالے سے ہر ایونٹ میں وہ مہمان اعزاز کے طور پر تشریف لاتے تھے۔ عبدالقادر (مرحوم) کے حوالے سے یہ رائے قائم کرنا بہت مشکل ہے کہ وہ کرکٹر بڑے تھے یا انسان بڑے تھے۔ انہوں نے کہا کہ ان کی شہرت ایک سچے انسان کی تھی وہ نتائج کی پرواہ کئے بغیر پورا اور کھرا سچ بولتے تھے۔ انہوں نے تقریب میں شرکت پر عبدالقادر(مرحوم) کے بیٹے سلمان قادر اور ان کی بیٹی نور فاطمہ کو خوش آمدید کہا اور یادگاری شیلڈ پیش کی۔

منہاج یونیورسٹی لاہور کے وائس چانسلرڈاکٹر ساجد محمود شہزاد نے خطبہ استقبالیہ میں عبدالقادر(مرحوم) کو منہاج یونیورسٹی لاہور کی طرف سے خراج تحسین پیش کیا اور تقریب میں شریک ہونے والے جملہ مہمانان گرامی کو خوش آمدید کہا۔ تقریب سے اظہر زیدی، مشتاق احمد، عامر سہیل، عامر نذیر، سلمان بٹ، سلمان قادر، محمد امین، نسیم شاہ اور منظور جونیئر نے خطاب کیا۔

سلمان قادر نے کہا کہ منہاج یونیورسٹی کے شکرگزار ہیں کہ انہوں نے میرے والد کی خدمات کے اعتراف کے لئے خصوصی تقریب کا اہتمام کیا۔ انہوں نے کہا کہ میرے والد توقع رکھتے تھے کہ عمران خان کے برسر اقتدار آنے پر پاکستان کی سپورٹس اور قومی ہیروز کو توجہ ملے گی۔ بہت ساری شخصیات نے بڑے بڑے وعدے کئے مگر انہوں نے پلٹ پھر حال نہیں پوچھا اگر ایک ٹی ٹونٹی یا ایک میچ عبدالقادر (مرحوم) کے نام ہو جائے گا تو کون سی قیامت ٹوٹ پڑے گی؟ انہوں نے مزید کہا کہ میرے والد ایک ایماندار اور محب وطن پاکستانی تھے۔ انہوں نے میں نے کرکٹ کے کھیل میں بہت تکلیف دہ لمحات بھی دیکھے، حق تلفی بھی کی گئی مگر میرے والد نے میرے لئے کبھی کسی سے سفارش نہیں کی۔ انہوں نے کہا کہ جن قوموں میں قومی ہیروز کی بے توقیری ہو وہاں اللہ ہیرو پیدا کرنے بند کردیتا ہے، یہ ہیروز اللہ کے انعام اور کرم یافتہ بندے ہوتے ہیں۔ تقریب میں تمام مقررین نے حکومت سے اپیل کی کہ کوئی بڑی سڑک یا کسی بڑے مقام کا نام عبدالقادر (مرحوم) کے نام کے ساتھ موسوم کیا جائے۔ تقریب کے اختتام پر ڈاکٹر حسین محی الدین قادری نے ڈاکٹر عبد القدیر (مرحوم) اور عبدالقادر (مرحوم) کی بخشش اور درجات کی بلندی کیلئے خصوصی دعا کروائی۔

تبصرہ

تلاش

ویڈیو

Ijazat Chains of Authority
Admissions Open Minhaj University Lahore
We Want to CHANGE the Worst System of Pakistan
Presentation MQI websites
Advertise Here
Top