انبیاء کرام، صحابہ، صلحاء امت اور اولیاء اللہ کا راستہ اختیار کرنے میں ہی کامیابی کی ضمانت ہے : طاہرہ فردوس

موجود ہ دورزوال میں شیطان اور نفس کے ہتھکنڈوں سے بچنے کے لیے نیک لوگوں کی صحبت اختیار کی جائے
مسلم سکالر طاہرہ فردوس کا دروس عرفان القرآن کی نشست سے خطاب

منہاج القرآن ویمن لیگ واہگہ ٹاؤن لاہور کے زیراہتمام ایک مقامی شادی ہال (رحمت شادی ہال، آخری منٹ سٹاپ) میں خواتین کے 9 روزہ دروس عرفان القرآن کی چوتھی نشست سے خطاب کرتے ہوئے مسلم سکالر طاہرہ فردوس نے کہا کہ آج انسانیت دنیاوی و اخروی کامیابی کے حصول کے لیے سرگرداں ہے جبکہ قرآن حکیم نے کئی صدیاں پہلے اس عقدہ کو حل کر دیا ہے اور اللہ نے اپنی کتاب قرآن مجید میں متلاشیان صراط مستقیم کی راہنمائی کے لیے فرمایا کہ سیدھا راستہ ان لوگوں کا راستہ ہے جن پر اللہ نے انعام فرمایا اور جو غضب الٰہی کا شکار ہوئے اور راہ راست سے بھٹک گئے ہیں ان کا راستہ صراط مستقیم نہیں۔ انہوں نے کہا کہ انبیاء کرام علیھم السلام، صحابہ رضی اللہ عنہم، صلحاء امت اور اولیاء اللہ کا راستہ اختیار کرنے میں ہی کامیابی کی ضمانت ہے۔ جن لوگوں نے اپنی زندگی اللہ اور اس کے رسول صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم کے بتائے ہوئے طریقے کے مطابق بسر کی ان لوگوں کے نقش قدم پر چلنے میں ہی یقیناً فلاح دارین ہے۔ اچھی اور نیک سنگت دنیا و آخرت کی کامیابی کی ضامن ہے۔ اہل حق سے نسبت محبت و الفت اور ان کی صحبت کا حصول یقیناً اللہ کی بہت بڑی نعمت ہے۔ انہوں نے کہا کہ کسی بھی انسان کے لئے بظاہر اپنے ہی جیسے انسان کے عمل کے مطابق اپنی زندگی کو بسر کرنا آسان ہوتا ہے یہی وجہ ہے کہ امت کے لیے انبیاء اور صلحاء کی پیروی کرنے میں کامیابی کی ضمانت رکھی گئی۔ انہوں نے کہا کہ نیک سنگت اس دنیا کی فلاح کے ساتھ ساتھ آخرت میں بھی کام آئے گی اور صالحین کی سفارش اور شفاعت کے ذریعے گنہگاروں کو بخشش اور دوزخ سے چھٹکارا نصیب ہو گا۔ انہوں نے اس ضرورت پر زور دیا کہ موجودہ دور زوال میں شیطان اور نفس کے ہتھکنڈوں سے بچنے کے لیے نیک لوگوں کی صحبت اختیار کی جائے اور بری صحبت سے اجتناب کیا جائے۔

تبصرہ

تلاش

ویڈیو

Ijazat Chains of Authority
We Want to CHANGE the Worst System of Pakistan
Top