نئی نسل کو بگاڑ سے بچانے کیلئے عورتوں کو بھی اپنا کردار ادا کرنا ہو گا : نوشابہ ضیاء

آج کی عورت مادیت کے باعث اسلامی روایات سے بغاوت کر رہی ہے

عصر حاضر میں عورت کی تربیت بہت ہی ضروری ہے۔ دین کی بنیادی تعلیمات اور عمل سے عاری عورت اپنی اولاد کی اسلامی خطوط پر تربیت اور کردار سازی نہیں کر سکتی۔ اسی وجہ سے آج عورت معاشرتی بگاڑ کی زیادہ ذمہ دار ہے۔ ان خیالات کا اظہار منہاج القرآن ویمن لیگ کی مرکزی ناظمہ نوشابہ ضیاء نے منہاج القرآن ویمن لیگ کے زیراہتمام منہاج ایجوکیشن کمپلیکس میں منعقد اسلامک لرننگ کورس کی ایک تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کہا۔

انہوں نے کہا کہ ہمیں معاشرے کو حقیقی اسلامی بنانے کیلئے مرد سے زیادہ عورت کی تربیت پر توجہ دینا ہو گی۔ مہنگائی و بے روزگاری، غربت و افلاس اور بے راہ روی نے آج ہمیں اسلام کے بتائے ہوئے حقیقی راستہ سے ہٹا دیا ہے۔ آج عورت کو اسلامی تعلیمات سے آگاہی کے زیادہ مواقع میسر نہیں۔ اس لیئے معاشرے کا شیرازہ بکھر رہا ہے۔ مٹتی ہوئی معاشرتی قدرو ں کو بچانے اور اسلام کی تجدید و احیا کے لیے ضروری ہے کہ عورت کی تربیت اور تعلیم پر خصوصی توجہ مرکوز کی جائے۔

انہوں نے کہا کہ ہمارا موجودہ دینی زوال اور معاشرتی بگاڑ جہالت اور دین سے دوری کی وجہ سے ہے اور فی زمانہ عورت کی تربیت اور زیور تعلیم سے آراستہ کرنا ایک ایسا فریضہ ہے جس سے غفلت کا خمیازہ امت مسلمہ کو بھگتنا ہو گا۔ انہوں نے کہا کہ نئی نسل کو بگاڑ سے بچانے کیلئے عورتوں کو بھی اپنا کردار ادا کرنا ہو گا۔ آج کی عورت مادیت کے باعث اسلامی روایات سے بغاوت کر رہی ہے جس سے ہمارا معاشرتی ڈھانچہ ٹوٹ پھوٹ کا شکار ہو رہا ہے۔ انہوں نے کہا کہ مسلمان عورت غیر اسلامی ثقافتی یلغار سے شدید متاثر ہے اس لیے اس کی اسلامی تربیت بہت ضروری ہے۔ آج عورت کو علم نافع کے حصول پر محنت کر کے عمل کا مرقع بننا ہو گا تا کہ زوال پذیر اسلامی قدروں کا پھر سے احیا ہو سکے۔

تبصرہ

تلاش

ویڈیو

Minhaj TV
Quran Reading Pen
We Want to CHANGE the Worst System of Pakistan
Presentation MQI websites
Advertise Here
Top