سپین : گستاخانہ خاکوں کی اشاعت کے خلاف منہاج القرآن انٹرنیشنل نے کیس دائر کر دیا

گذشتہ ہفتے ہسپانوی میگزین کی طرف سے توہین آمیز خاکوں کی اشاعت کے خلاف منہاج القرآن انٹرنیشنل سپین کی طرف سے یکم اکتوبر 2012 کو بارسلونا کی عدالت میں کیس دائر کر دیا گیا ہے منہاج القرآن انٹرنیشنل سپین کے مطابق کیس میں سپین کے فوجداری قانون Codigo Penal کے آرٹیکل 525 کو بنیاد بنایا گیا ہے، مذکورہ آرٹیکل کے تحت کسی بھی مذہب کی توہین یا مذاق اڑانا قابلِ تعزیر جرم ہے۔

تفصیلات کے مطابق توہین مذہب کا کیس دائر کرنے کے لیے منہاج القرآن انٹرنیشنل سپین نے انسانی اور مذہبی حقوق کے ماہر وکیل Ivan Jimenez کی خدمات حاصل کی ہیں، جن کا کہنا ہے کہ اس کیس کا فیصلہ 1ماہ کے اندر آجائے گا کیونکہ قانون کے اندر کسی بھی مذہب کی توہین کی واضح طور ممانعت موجود ہے، کیس دائر کرتے وقت وکیل کے ہمراہ مرزا محمد اکرم بیگ (صدر منہاج القرآن انٹرنیشنل سپین)، نوید احمد اندلسی(سیکریٹری جنرل)، محمد اقبال چوہدری ( صدر منہاج مصالحتی کونسل سپین) اور ڈاکٹر قمر احسان (چیف ایڈیٹر ڈیلی دوست) بھی موجود تھے، اس کے علاوہ کاتالونیا ٹیلی ویژن TV3 کی ٹیم نے کیس دائر کرنے کی کاروائی کی مکمل رپورٹنگ بھی کی۔

اس موقع پر منہاج مصالحتی کونسل سپین کے صدر محمد اقبال چوہدری نے کاتالونیا ٹیلی ویژن سے گفتگو کرتے ہوئے بتایا کہ میگزین نے پیغمبر اسلام صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم کے توہین آمیز کارٹون شائع کر کے دین اسلام کی توہین کی ہے جس سے سپین میں بسنے والے لاکھوں مسلمانوں کے جذبات مجروح ہوئے ہیں۔

رپورٹ: نوید احمدا ندلسی

تبصرہ

تلاش

ویڈیو

Minhaj TV
Quran Reading Pen
We Want to CHANGE the Worst System of Pakistan
Presentation MQI websites
Advertise Here
Top