موجودہ نظام انتخاب کو تبدیل کیے بغیر 100 الیکشن بھی ملک میں تبدیلی نہیں لا سکتے۔ عبد الرحمن شان

تحریک منہاج القرآن جہانیاں کے صدر عبدالرحمن شان شیخ نے صحافی حضرات خالد شریف گجر، عرفان اسلم، عبد المجید رحمانی، محمد فریاد، نصر اللہ سیالوی، اشفاق احمد سے ملاقات کے دوران گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ پاکستان میں جمہوریت نہیں مجبوریت کا نظام نافذ ہے۔ ہم اس ظالمانہ عوام دشمن نظام کو مسترد کرتے ہیں۔ اس نظام کو تبدیل کیے بغیر 100 الیکشن بھی ملک میں تبدیلی نہیں لا سکتے۔ پاکستان کے مسائل حل کرنے کے لیے عوام کو حقیقی تبدیلی کے لیے اٹھنا ہو گا۔ 23 دسمبر کو شیخ الاسلام ڈاکٹر محمد طاہر القادری کی پاکستان آمد کے موقع پر تاریخ ساز عوامی استقبال کریں گے جس میں 50 لاکھ سے زائد افراد شریک ہوں گے۔ یہ استقبال جلسہ کی صورت اختیار کرے گا جو کہ پاکستان میں حقیقی تبدیلی کا پیش خیمہ ثابت ہو گا۔ ڈاکٹر طاہر القادری سیاست کرنے کے لیے پاکستان نہیں آ رہے ہیں بلکہ پاکستان کو بچانے کے لیے آ رہے ہیں۔ ہم نظام کی تبدیلی کا جھنڈا لے کر میدان میں اتر رہے ہیں اور پرامن طریقے سے حقیقی تبدیلی کا لائحہ عمل شیخ الاسلام ڈاکٹر محمد طاہر القادری پوری قوم کو دیں گے۔

صحافیوں کے سوالات کا جواب دیتے ہوئے انہوں نے کہا کہ ہم جمہوریت کے مخالف نہیں مگر پاکستان میں جمہوریت نما تماشہ کے مخالف ہیں۔ یہ نام نہاد جمہوریت ہے جس میں عوام کا کوئی حصہ نہیں۔ یہ صرف دو فیصد اشرافیہ کے مفادات کے تحفظ کا دوسرا نام ہے جبکہ 98 فیصد غریب عوام ظلم کی چکی میں پس رہے ہیں۔ پاکستان میں انتخابات کے نام پر کھیل کھیلا جاتا ہے۔ ہم اس کے خلاف آواز بلند کر رہے ہیں۔ الیکشن کے نظام کے خلاف ہماری جدوجہد جاری رہے گی۔

اس موقع پر سر پرست اعلی حافظ احمد دین، سینیئر نائب صدر ڈاکٹر ایوب، نائب صدر عبدالکریم، ناظم محمد شہباز، ناظم مالیات امتیاز احمد، خالد ندیم اور دیگر مقامی رہنما بھی موجود تھے۔

تبصرہ

تلاش

ویڈیو

Minhaj TV
Quran Reading Pen
Presentation MQI websites
Advertise Here
Top