ڈاکٹر طاہر القادری کی پشاور میں سرکاری ملازمین کی بس میں دھماکہ کی شدید ترین مذمت

کرپٹ اور استحصالی نظام انتخاب عوام کو تحفظ دینے میں مکمل طور پر ناکام ہو چکا
مصلحت کی زنجیروں سے آزاد ہو کر آہنی ہاتھوں سے دہشت گردی کے فتنے کا سر کچلنے کی ضرورت ہے
دہشت گردی کا خاتمہ بیانات سے قیامت تک نہ ہو گا، سخت ترین اقدامات کرنا ہونگے

پاکستان عوامی تحریک کے قائد ڈاکٹر محمد طاہر القادری نے پشاور چارسدہ روڈ پر سرکاری ملازمین کی بس میں ہونیوالے بم دھما کہ کی شدید ترین مذمت کی ہے۔ انہوں نے کہا کہ کرپٹ اور استحصالی نظام انتخاب عوام کو تحفظ دینے میں مکمل طور پر ناکام ہو چکا ہے۔ مصلحت کی زنجیروں سے آزاد ہو کر آہنی ہاتھوں سے دہشت گردی کے فتنے کا سر کچلنے کی ضرورت ہے۔ دہشت گردی پاکستان کے ماتھے کا بدنما داغ ہے اسکا خاتمہ ناگزیر ہے۔

ڈاکٹر طاہر القادری نے کہا کہ دہشت گردی کا خاتمہ بیانات سے قیامت تک نہ ہو گا اس کیلئے سخت ترین اقدامات کرنا ہونگے کیونکہ ملکی تشخص اور سلامتی سے بڑھ کر کچھ نہیں ہے۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان گذشتہ ایک دھائی سے دہشت گردی کی بدترین لپیٹ میں ہے مگر ابھی تک اس کے خاتمے کا نہ عزم دکھائی دیتا ہے اور نہ ہی اقدامات۔ مقتدر طبقہ یاد رکھے عوام کو دہشت گردوں کے رحم و کرم پر چھوڑنے والے عناصر عوامی غیض و غضب سے نہ بچ سکیں گے۔ انہوں نے جاں بحق ہونیوالوں کیلئے دعائے مغفرت اور زخمیوں کی جلد صحتیابی کی دعا بھی کی۔

تبصرہ

تلاش

ویڈیو

Minhaj TV
Quran Reading Pen
We Want to CHANGE the Worst System of Pakistan
Presentation MQI websites
Advertise Here
Top