عوامی تحریک نے سانحہ ماڈل ٹاؤن کو لاہور ہائیکورٹ میں چیلنج کر دیا

ایک ہی واقعہ پر الگ الگ چالان اور فرد جرم عائد نہیں ہو سکتی، پٹیشن میں موقف
انصاف کے تقاضے پورے نہ کئے گئے تو بھیانک نتائج برآمد ہونگے، ترجمان عوامی تحریک

لاہور (28 جنوری 2016) پاکستان عوامی تحریک کے ترجمان نے کہاہے کہ سانحہ ماڈل ٹاؤن کو لاہور ہائیکورٹ میں چیلنج کردیا ہے۔ رٹ پٹیشن عوامی تحریک کے وکلا رائے بشیر ایڈووکیٹ اور قمر اشفاق چوہدری کی طرف سے دائر کی گئی ہے۔ رٹ پٹیشن میں موقف اختیار کیا گیا ہے کہ ایک ہی واقعہ پر الگ الگ چالان اور فرد جرم عائد نہیں ہو سکتی۔ یہ اقدام آئین کے آرٹیکل 13 اور ضابطہ فوجداری کی دفعہ 265 کے خلاف ہے۔ عوامی تحریک کے وکلاء پینل میں نعیم الدین چودھری ایڈووکیٹ اور محمد ناصر ایڈووکیٹ بھی شامل ہیں۔

ترجمان نے کہا ہے کہ عدالت سے استدعا کی ہے کہ دہشتگردی کی عدالت کو ایک ہی کیس میں الگ الگ ٹرائل سے روکا جائے، واقعہ سے متعلق تمام چالان اکٹھے کئے جائیں۔ ترجمان نے کہاکہ انصاف کیلئے قانونی جنگ لڑ رہے ہیں، دہشتگردی کی عدالت میں جاری سماعت پر تحفظات ہیں۔ ایک ہی کیس ایک ہی واقعہ اور ایک ہی ملزمان کو الگ الگ ٹرائل کیا جا رہا ہے، جو قوانین کے خلاف ہے۔ انہوں نے کہاکہ انصاف کا خون نہیں ہونے دیں گے۔ 14 شہداء انصاف کے منتظر ہیں۔ اگر انصاف کے تقاضے پورے نہ کئے گئے تو اس کے بھیانک نتائج برآمد ہونگے۔

تبصرہ

تلاش

ویڈیو

Minhaj TV
Quran Reading Pen
We Want to CHANGE the Worst System of Pakistan
Presentation MQI websites
Advertise Here
Top