اسلامی نظام معیشت کے نفاذ سے پاکستان قرضوں کی دلدل سے نکل آئے گا: فیض الرحمن درانی

ڈاکٹر طاہرالقادری نے آئندہ نسلوں کو دہشتگردی سے بچانے کیلئے ضرب امن شروع کی
سازش کے تحت پاکستان کو نااہل حکمرانوں کے ذریعے ناکام ریاست بنایا جارہا ہے
مرکزی امیر تحریک کا جامع المنہاج ماڈل ٹاؤن میں جمعتہ المبارک کے بڑے اجتماع سے خطاب

لاہور (29 جنوری 2016) تحریک منہاج القرآن کے مرکزی امیر صاحبزادہ فیض الرحمن درانی نے کہا ہے کہ بداعمال حکمران، قتل و غارت گری، دہشتگردی اور خوف و ہراس عذاب کی شکل اختیار کیے ہوئے ہیں، جنوبی ایشیاء میں پاکستانی عوام حکمرانوں کی نااہلیوں کا سب سے زیادہ خمیازہ بھگت رہے ہیں اور سازش کے تحت پاکستان کو ناکام ریاست بنانے کی کوشش کی جارہی ہے۔ انہوں نے کہا کہ اسلامی نظام معیشت میں کوئی بھوکا رہ سکتا ہے نہ ملک مقروض ہوسکتا ہے، مگر مغربی سرمایہ دارانہ معاشی نظام کے محافظ حکمرانوں نے امت مسلمہ کے ہر فرد کو قرضوں کے جال میں جکڑ دیا۔ باصلاحیت افرادی قوت کرشماتی نعمتوں کے باوجود ملک بھوک اور اندھیروں میں ڈوبا ہوا ہے۔ تھرپارکر سمیت ملک کے کئی شہروں میں بھوک کی فصل اگ رہی ہے، روزانہ معصوم بچے علاج اور خوراک نہ ہونے کی وجہ سے موت کے منہ میں جارہے ہیں، یہ سارے عذاب جو قوم پر مسلط ہیں اجتماعی بداعمالیوں کا نتیجہ ہیں، وہ جامع المنہاج ماڈل ٹاؤن میں جمعۃ المبارک کے بڑے اجتماع سے خطاب کررہے تھے۔ انہوں نے کہا کہ جو حکمران حرص و حوص کا شکار ہو جائیں، غریب سے اس کے بچوں کا نوالہ چھین لیں، بے گناہوں کا قتل عام کریں، وہاں ایسے عذاب آیا ہی کرتے ہیں۔ حکمرانوں نے ماڈل ٹاؤن میں 14 بے گناہوں کو شہید کیا، 90 لوگوں کو شدید زخمی کرکے عمر بھر کیلئے معذور بنادیا اور پھر انصاف کے حق سے محروم کر دیا۔

انہوں نے کہا کہ ظلم پر خاموشی اختیار کرنے والے بھی اللہ کی عدالت میں جوابدہ ہونگے۔ انہوں نے کہا کہ حضور صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم کا فرمان ہے جس معاشرے میں ظلم ہو اور یتیم کا حق مارا جائے اللہ تعالیٰ اس معاشرے سے برکت اٹھالیتا ہے۔ انہوں نے سربراہ عوامی تحریک ڈاکٹر طاہر القادری کو ’’ضرب امن‘‘ کا آغاز کرنے پر زبردست خراج تحسین پیش کیا۔ انہوں نے کہا کہ نوجوانوں کو انتہا پسندی کی گمراہی سے بچانے کی کوششیں عظیم جہاد ہیں۔

تبصرہ

تلاش

ویڈیو

Minhaj TV
Quran Reading Pen
We Want to CHANGE the Worst System of Pakistan
Presentation MQI websites
Advertise Here
Top