آئندہ ماہ یونیورسٹی کی سطح پر سپورٹس لیگ مقابلے ہونگے: راجہ یاسر ہمایوں

میں اور وسیم اکرم اکٹھے کرکٹ میں آئے، اللہ نے ایمپائرنگ میں ملک کا نام روشن کرنے کی توفیق دی:علیم ڈار
کھیلوں کی پروموشن کے لئے سپورٹس بورڈ ہر طرح کے تعاون کیلئے تیار ہیں: ڈی جی سپورٹس پنجاب ندیم سرور
کھیلوں کی اہمیت کو سمجھتے ہیں، ڈپٹی چیئرمین ڈاکٹر حسین محی الدین نے مہمانوں کا شکریہ ادا کیا
منہاج یونیورسٹی کے سپورٹس فیسٹیول کی اختتامی تقریب میں اظہر زیدی، ظفر عباس لک، ٹیسٹ کرکٹر عباس مغل کی شرکت

Minhaj University Lahore Sports festival 2019

لاہور (29 جنوری 2019) منہاج یونیورسٹی لاہور کے زیراہتمام منعقدہ 15 روزہ سپورٹس فیسٹیول کی اختتامی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے صوبائی وزیر ہائر ایجوکیشن راجہ یاسر ہمایوں نے کہا کہ کھیلیں تعلیمی زندگی کا ناگزیر حصہ ہیں، اگلے ماہ سے حکومت پنجاب کی سرپرستی میں یونیورسٹی سپورٹس لیگ مقابلے ہو رہے ہیں، یونیورسٹی کی سطح پر کھیلوں کا فروغ ہماری حکومت کی پالیسی اور اولین ترجیح ہے، انہوں نے کہا کہ مجھے بے حد خوشی ہوئی کہ منہاج یونیورسٹی کھیلوں کے فروغ میں اہم کردار ادا کر رہی ہے، طلبہ تعلیم کے ساتھ ساتھ اپنی ذہنی و جسمانی ورزش کیلئے صحت مندانہ کھیلوں میں ضرور حصہ لیں، کھیلوں سے صلاحیتوں میں نکھار آتا ہے۔

اختتامی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے عالمی شہرت یافتہ آئی سی سی کرکٹ ایمپائر علیم ڈار نے کہا کہ پاکستان کا سافٹ امیج کھیلوں کے فروغ سے جڑا ہے، اگر نوجوان نسل کو انتہاپسندی اور منشیات سے بچانا ہے تو سپورٹس سر گرمیوں کو عام کرنا ہو گا، انہوں نے کہا کہ میں اور وسیم اکرم اکٹھے کرکٹ کی دنیا میں داخل ہوئے، وسیم بطور باؤلر اور میں بیٹسمین سلیکٹ ہوا اور پھر وسیم نے باؤلنگ اور میں نے بیٹنگ تو بہت کی مگر اللہ نے ایمپائرنگ میں عزت دی اور پاکستان کا نام روشن کیا، جب بھی ورلڈ کلاس ایمپائرنگ کا ذکر ہو گا تو پاکستان کا ذکر سر فہرست ہو گا، کوئی بڑا آدمی بڑے وسائل سے نہیں علم اور سخت محنت سے بنتا ہے، زندگی میں آگے بڑھنے کے لیے پہلی سیڑھی علم ہے آج دنیا میں ڈاکٹر طاہر القادری علم کی وجہ سے جانے جاتے ہیں، علم اور محنت سے ترقی کے دروازے کھلتے ہیں۔

اختتامی تقریب میں ڈائریکٹر جنرل سپورٹس پنجاب ندیم سرور، سابق آئی جی موٹروے ظفر عباس لک، قومی کرکٹ ٹیم کے مایہ ناز کھلاڑی عباس مغل، سابق منیجر پاکستان قومی کرکٹ ٹیم اظہر زیدی، ایم پی اے نذیر چوہان، ڈائریکٹر سپورٹس حفیظ بھٹی، کرکٹ ایمپائر قیصر خان، صدر لاہور کرکٹ ایسوسی ایشن (جنوبی) محمد افضال، انٹرنیشنل گولڈ میڈلسٹ ریسلر انعام بٹ، وائس چانسلر ڈاکٹر اسلم غوری، پرو وائس چانسلر ڈاکٹر شاہد سرویا نے شرکت کی۔

ڈی جی سپورٹس ندیم سرور نے کہا کہ کھیلوں کے فروغ میں منہاج یونیورسٹی کا کردار اہم ہے مجھے یہاں آ کر بہت خوشی ہوئی ہے کھیلوں کی پروموشن کے لئے سپورٹس بورڈ ہر طرح کے تعاون کے لئے ہمہ وقت تیار ہے، پاکستان کا عالمی تشخص بہتر کرنے کیلئے کھیلوں کو فروغ دینا ہو گا، کھیلوں کے میدان آبادکرنا ہونگے، کھیلوں کے فروغ اور بہتری کیلئے بھرپور اقدامات کرتے رہیں گے۔

سابق منیجر پاکستان کرکٹ ٹیم اظہر زیدی نے کہا کہ مجھے خوشی ہے منہاج یونیورسٹی اعلیٰ تعلیم کے ساتھ ساتھ کھیلوں کے ایونٹس کاانعقاد کر کے نوجوانوں کو سازگار ماحول فراہم کررہی ہے، منہاج یونیورسٹی کی طرح دیگر یونیورسٹیاں بھی کھیلوں کی سرپرستی کرے تو پاکستان ایک بار پھر کھیلوں میں باوقار مقام حاصل کر سکتا ہے، آج عالمی معیار کے سپورٹس کورٹس اور گراؤنڈز میں کھیلتے ہوئے بچوں اور بچیوں دیکھ کر یقین ہو گیا کہ پاکستان میں ٹیلنٹ کی کوئی کمی نہیں۔

سابق آئی جی موٹروے ظفر عباس لک نے کہا کہ منہاج یونیورسٹی کے طلباء و طالبات حصول علم کے ساتھ ساتھ کھیلوں میں بھی فعال اور متحرک ہیں، یہ خوش آئند بات ہے، کھلاڑیوں کا جوش و خروش اور دلچسپی دیکھ کر یقین ہو گیا کہ نوجوان باصلاحیت اور پرعزم ہیں، یونیورسٹیز اگر کھیلوں پر توجہ دیں تو یقیناًبہترین ٹیلنٹ ابھر سکتاہے۔

ڈپٹی چیئرمین ڈاکٹر حسین محی الدین قادری نے مہمانوں کا شکریہ ادا کیا اور کہا کہ منہاج یونیورسٹی اعلیٰ تعلیم کی فراہمی کے ساتھ ساتھ سپورٹس سرگرمیوں کی سر پرستی کر رہی ہے، کھیلیں نوجوانوں کی کردار سازی میں مرکزی کردار کی حامل، انہوں نے سپورٹس فیسٹیول کے کامیاب انعقاد پر ڈائریکٹر سپورٹس اقبال مرتضیٰ اور ان کی پوری ٹیم کو مبارکباد دی ڈاکٹر محمد اسلم غوری اور پرو وائس چانسلر ڈاکٹر شاہد سرویا نے اول، دوم پوزیشنز حاصل کرنے والے کھلاڑیوں کو مبارکباد دی اور کہا کہ آئندہ سال کھیلوں کے مقابلوں کا دائرہ مزید وسیع کیا جائے گا۔

تبصرہ

تلاش

ویڈیو

Minhaj TV
Quran Reading Pen
Presentation MQI websites
Advertise Here
Top