حکومت آئمہ مساجد کی مراعات کو قومی بجٹ میں شامل کرے: علامہ میر آصف اکبر

مورخہ: 14 مئی 2019ء

آئمہ مساجد کو گریڈ 14 اور 16 کے برابر اعزازیہ دینے کی تجویز پر عمل کیا جائے: منہاج القرآن علماء کونسل
خطباء و آئمہ مساجد کو محلے کی کمیٹیوں کے رحم و کرم پر چھوڑنا نامناسب ہے

لاہور (14 مئی 2019ء) منہاج القرآن علماء کونسل کے مرکزی ناظم علامہ میر آصف اکبر قادری نے کہا ہے کہ آئمہ مساجد کو گریڈ 14 اور 16 کا اعزازیہ ملنے سے نہ صرف آئمہ مساجد ایک جامع نظام کے تحت آئیں گے اور ان کے سماجی وقار میں اضافہ ہو گا بلکہ اس فیصلے سے انتہا پسندی، دہشتگردی کو کنٹرول کرنے میں بھی مدد ملے گی، ان خیالات کا اظہار انہوں نے مختلف مدارس کے مہتتم اور مساجد کمیٹیوں کے نمائندگان سے ملاقات کے دوران کیا، علامہ میر آصف اکبر نے کہا کہ حکومت اسلام کے مراکز مساجد کی دیکھ بھال کیلئے آگے آئے جس طرح سرکاری سکولوں میں سولر سسٹم کی انسٹالیشن کی جارہی ہے اسی طرح کا سسٹم مساجد کو بھی دیا جائے، اس سے نہ صرف بجلی کی بچت ہو گی بلکہ عبادت بھی آرام اور سہولت کے ساتھ ہو سکے گی۔ انہوں نے مزید کہا کہ آئمہ مساجد کو بہت تھوڑا معاوضہ ملتا ہے جس سے ان کے گھر بار نہیں چلتے، اس لیے حکومت آئمہ مساجد کو گریڈ 14 اور 16کے برابر اعزازیہ دیے جانے کے پروگرام کو حتمی شکل دے، اس فیصلے کے بہت مثبت اثرات مرتب ہوں گے، آئمہ مساجد و خطباء حضرات کے ذریعے امن کے قومی بیانیہ کو ہر سطح پر موثر انداز میں اجاگر کیا جا سکتا ہے۔ ریاست اپنے قومی بجٹ میں آئمہ مساجد کو بھی شامل کرے اور انہیں محلہ کمیٹیوں اور چند مخصوص افراد کے رحم و کرم پر نہیں چھوڑا جان چاہیے، اس فیصلے کے بعد آئمہ مساجد کو مختلف قسم کے ریفریشر کورسز کروانے میں بھی مدد ملے گی۔

تبصرہ

تلاش

ویڈیو

Minhaj TV
Quran Reading Pen
Presentation MQI websites
Advertise Here
Top