حضرت عمر فاروق اعظم (رض) کے فول پروف خدمت خلق کے نظام کو آج یورپ بھی مانتا اور اس پر عمل کرتا ہے : سید فرحت حسین شاہ

حضرت عمر فاروق رضی اللہ عنہ نے تعلیم و تربیت کو ہر ایک کے لیے عام اور لازمی قرار دیا : امداد اللہ
منہاج القرآن علماء کونسل کے زیر اہتمام ماڈل ٹاؤن میں فاروق اعظم کانفرنس سے مقررین کا خطاب

حضرت عمر فاروق رضی اللہ عنہ نے اپنے دور خلافت میں بے لاگ احتساب کا منظم نظام بنایا۔ جس میں امیر المومنین کا محاسبہ بھی موجود تھا اس لیے کرپشن ناممکن تھی۔ حضرت عمر فاروق اعظم رضی اللہ عنہ کے فول پروف خدمت خلق کے نظام کو آج یورپ بھی مانتا اور عمل کرتا ہے۔ ان خیالات کا اظہار مرکزی ناظم منہاج القرآن علماء کونسل سید فرحت حسین شاہ نے منہاج القرآن علماء کونسل کے زیر اہتمام ماڈل ٹاؤن میں فاروق اعظم کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ پروگرام کی صدارت مولانا محمد عثمان سیالوی نے کی۔ سید فرحت حسین شاہ نے کہا کہ حضرت عمر فاروق رضی اللہ عنہ نے احتساب کے لیے اپنے آپ کو پیش کیا۔ حضرت عمر فاروق اعظم رضی اللہ عنہ نے فوجی نظام، محکمہ پولیس، جیل، بیت المال اور تنخواہوں کے نظام کو بہترین بنایا اور چلایا۔ سید فرحت حسین شاہ نے کہا کہ حضرت عمر فاروق اعظم رضی اللہ عنہ نے نئے شہروں کا قیام کیا، نہروں کا نظام، مردم شماری، صوبوں اور اضلاع کا نظام، سنہ ہجری کا آغاز، ائمہ اور معلمین کی تنخواہیں مقرر کی۔ علامہ حاجی امداد اللہ قادری صدر پنجاب منہاج القرآن علماء کونسل نے کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ حضرت عمر فاروق رضی اللہ عنہ نے تعلیم و تربیت کو ہر ایک کے لیے عام اور لازمی قرار دیا اور سختی سے اس پر عمل درآمد بھی کروایا جو اس سے منحرف ہوتا اسے سزا دیتے۔ انہوں نے کہا کہ حضرت عمر فاروق رضی اللہ عنہ راتوں کو بھیس بدل کر عوام کے حالات سے آشنا ہوتے اور ان کی خدمت میں سرگرم عمل رہتے۔ علامہ آصف اکبر میر ناظم پنجاب منہاج القرآن علماء کونسل نے کہا کہ حضرت عمر فاروق اعظم رضی اللہ عنہ میں فکر آخرت بہت زیادہ تھی۔ اللہ کے حضور پیشی سے ڈرتے، کئی دفعہ آنسووں کی جھڑی لگ جاتی۔ انہوں نے کہا کہ اللہ تعالیٰ نے ا ن کو اتنا رعب عطا کیا تھا کہ ان کے خوف سے قیصر و کسری وقت کی سپر پاورز کے ایوانوں میں زلزلہ آجایا کرتا تھا۔

تبصرہ

تلاش

ویڈیو

Minhaj TV
Quran Reading Pen
We Want to CHANGE the Worst System of Pakistan
Presentation MQI websites
Advertise Here
Top